سندھ میں کھیلوں کی ترقیاتی اسکیموں کے بجٹ میں مسلسل تیسرے سال کمی

کراچی:  سندھ میں نوجوانوں کو مثبت سرگرمیوں کی فراہمی اور کھیلون کے فروغ کے لیے حکومتی دعووں کی قلعی کھل گئی، صوبے کے سالانہ بجٹ میں مسلسل تیسری مرتبہ کھیلوں کی ترقیاتی اسکیموں کو اکٹھا کر ان کے لیے رقم میں بھی کمی کر دی گئی۔

رواں مالی سال 20-2019میں کھیلوں کی 44 ترقیاتی اسکیموں کے لیے کٹوتی کے بعد مجموعی طور پر 95 کروڑ 23 لاکھ 59 ہزار روپے کی رقم مختص کی گئی ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ مالی سال میں کھیلوں کی 45 ترقیاتی اسکیموں کے لیے ایک ارب 34 کروڑ 98 لاکھ 35 جبکہ مالی سال 18-2017میں ان مقاصد کے لیے ایک ارب 65 کروڑ 96 لاکھ ہزار روپے رکھے گئے تھے۔

نئے مالی سال میں کیڈٹ کالج، اسٹیل ملز کراچی میں ایتھلیٹکس ٹریک اور گراسی فٹبال گرائونڈ کی تعمیر کے لیے 4 کروڑ روپے کی نئی ترقیاتی اسکیم کے لیے رواں سال ایک کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں۔

اے جی سندھ، کراچی میں 5 کروڑ روپے کی لاگت کے اسپورٹس انڈور ہال، سینتھیٹک فٹبال گرائونڈ اور باسکٹ بال کورٹ کے لیے ایک کروڑ 25 لاکھ روپے رکھے گئے ہیں۔

Facebook Comments

یہ بھی دیکھیں

گیانا ایمیزون واریئرز نے شاداب خان کی جگہ عمران طاہر کی خدمات حاصل کرلیں

پورٹ آف اسپین: کیریبیئن پریمیئر لیگ ٹیم گیانا ایمیزون واریئرز نے شاداب خان کی جگہ جنوبی …