خواتین کی حفاظت ہمارا اخلاقی فرض ہے، عمران ہاشمی

ممبئی: نامور بالی ووڈ اداکار عمران ہاشمی کا کہنا ہے کہ اداکاروں کو فلمیں سائن کرنے سے پہلے معاہدے میں جنسی ہراسانی سے متعلق شق شامل کروانی چاہیے تاکہ ہراسانی اور بدسلوکی جیسے واقعات سے محفوظ رہ سکیں۔

بالی ووڈ میں بے باک سین فلمانے کے حوالے سے مشہور اداکار عمران ہاشمی نے کہا ہے کہ اداکاروں کو چاہیے کہ  فلمیں سائن کرنے سے قبل فلمسازوں کے ساتھ کیے جانے والے معاہدے میں جنسی ہراسانی سے متعلق شق شامل کروائیں۔

عمران ہاشمی نے کہا کہ انہوں نے مختلف پروڈکشن ہاؤسز کے ساتھ کام کرنے کے تجربے کے بعد جنسی ہراسانی کی شق اپنے معاہدے میں شامل کروانے کا فیصلہ کیا،  یہ اقدام خواتین کو تحفظ فراہم کرتا ہے اور مردوں کو اپنی حدیں پار کرنے سے روکتا ہے۔

عمران ہاشمی نے ’’می ٹو‘‘مہم کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ یہ ایک اچھا آغاز ہے کیونکہ ہر طرح کے حالات میں خواتین کی حفاظت کی ذمہ داری مردوں پر ہوتی ہے اور یہ ہمارا اخلاقی فرض ہے کہ ہم خواتین کی حفاظت کریں۔ ’’می ٹو‘‘مہم کے تحت اٹھنے والی بہت سی آوازیں سچ پر مبنی ہیں لیکن کچھ خواتین جنسی ہراسانی اور می ٹو مہم کو ایجنڈے کے طور پر استعمال کرسکتی ہیں۔

Facebook Comments

یہ بھی دیکھیں

دپیکا پڈوکون اورکترینہ کیف کے درمیان سرد جنگ ختم

ممبئی: بھارتی فلم انڈسٹری کی دو صف اول کی اداکاراؤں دپیکا پڈوکون اور کترینہ کیف کے …